لدائی کہ عمل
  • تاریخ: 2014 جنوری 25

جناب اختری: وہابی شیعت کے پھیلنے سے خوفناک ہیں۔


           

نماز جمعہ کے خطبوں سے پہلے

جناب اختری: وہابی شیعت کے پھیلنے سے خوفناک ہیں۔

اہلبیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے آج تہران میں نماز جمعہ کے خطبوں سے پہلے خطاب کرتے ہوئے کہا: مذہب تشیع کے ساتھ دشمنوں نے ابتدا سے ہی دشمنی کرنا شروع کر دی تھی ان کی ہمیشہ یہ کوشش تھی کہ یہ مذہب ترقی نہ کرے اس کے اندر انحرافات پیدا کئے وہ احادیث جو اس مذہب کے سلسلے میں رسول اسلام سے وارد ہوئی تھیں ان حدیثوں کی نشر و اشاعت پر پابندی لگا دی ان میں انحراف پیدا کر دیا قرآن کی تفسیریں بدل دی گئیں اسلام کا نقشہ اس حد تک بدل دیا کہ خاندان علی بن ابی طالب ہجرت کرنے پر مجبور ہو گئے۔

انہوں نے سترہ ربیع الاول کی مناسبت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امام صادق علیہ السلام  نے اسلامی یونیورسٹی قائم کر کے دین اسلام کا حقیقی چہرہ پہچنوایا مکتب تشیع اور فقہ جعفری کی ترویج کی آپ نے ۴ ہزار شاگردوں کی تربیت کر کے شیعت کی بقا کی ضمانت دے دی۔

جناب اختری نے مزید کہا: امام صادق (ع) نے نہ صرف اسلامی تعلیمات بلکہ علم ریاضیات اور سانئس میں بھی شاگرد تربیت کئے بعض علما کا کہنا ہے کہ امام صادق علیہ السلام کے زمانے میں علم ۵۰۰ شاخوں میں تقسیم ہوا۔ آپ عالم اسلام کے اندر علم کی روشنی پھیلا رہے تھے جبکہ حکومتی عہدہ دار اس روشنی کو بجھانے کی کوشش کر رہے تھے۔

اہلبیت(ع) عالمی اسمبلی کے جنرل سکریٹری نے عصر امام صادق (ع) کو عصر حاضر کےساتھ تقابل کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے زمانے میں بھی حکومتی آلہ کار دینی روشنی کو ختم کرنے کے در پہ تھے لیکن خمینی کبیر(رہ) نے ان کے اس منصوبہ کو نقش بر آب کردیا۔ آج ہمارے ہر صنف کے لوگوں کو امام راحل کی تحریک کا ایک بار پھر مطالعہ کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے تاکید کی کہ ابھی بھی داخلی اور خارجی دشمن اس اسلامی نظام کو ختم کرنے کے در پے ہیں آج کا مسلمان بھی اسلام کے ساتھ بر سر پیکار ہے مسلمانوں کے درمیان دھڑے اور فرقے ایجاد کر کے اسلام کے نام پر مسلمانوں کا قتل کر کے حقیقی اسلام کو مٹانا چاہتا ہے۔ لیکن دشمن جان لے اس درمیان کچھ باشعور مسلمان بھی موجود ہیں جو اس دشمن کی چالوں کو سمجھ رہے ہیں وہ حقیقی اسلام کو دشمن کی سازشوں کا بازیچہ نہیں بننے دیں گے۔

انہوں نے اسلام کے دشمن وہابی فرقے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ وہابیت کو مسلمانوں کے درمیان اسی کام کے لیے وجود میں لایا گیا ہے تاکہ مسلمان نما افراد سے مسلمانوں کا خون بہایا جائے اور اس طرح سے اسلام کو بدنام کیا جائے۔

حجۃ الاسلام و المسلمین اختری نے کہا کہ خوش قسمتی سے ہمارے دشمن جاہل اور بے عقل ہیں ان کے درمیان ہماری طرح کے دانشمند موجود نہیں ہیں ہم نے کئی بار کہا ہے کہ اگر واقعا تم خود کو حق بجانب سمجھتے ہو تو آو ہم مناظرہ کرنے کے لیے تیار ہیں لیکن یہ شیعوں کے عقل و منطق سے ہراساں ہیں وہ اتنے ڈرپوک ہیں کہ اپنے ملک میں ایک  نہج البلاغہ کو شائع نہیں کر سکتے وہ جانتے ہیں کہ نہج البلاغہ میں مولا علی (ع) نے ان جیسے حکمرانوں کی دھجیاں اڑائی ہیں۔

اہلبیت(ع) عالمی اسمبلی کے سکریٹری جنرل نے اپنی گفتگو کے آخر میں کہا کہ اہلبیت (ع) عالمی اسمبلی ایک غیر سرکاری ادارہ ہے جو دنیا کےکونے کونے میں مظلوم شیعوں کی حمایت کر رہا ہے اور دشمنوں کا مختلف طریقوں سے مقابلہ کر رہا ہے لیکن اس ادارہ کو آپ لوگوں کی حمایت کی ضرورت ہے آپ لوگوں کے مالی تعاون کی ضرورت ہے جو لوگ تعاون کرنے کی استعداد رکھتے ہیں وہ اس ادارے کا تعاون کریں تا کہ یہ ادارہ دنیا کے گوشے گوشے میں وہابیوں کے ظلم تلے پسنے والے مظلوم شیعوں کی مدد کر سکے۔ 

Copyright © 2009 The AhlulBayt World Assembly . All right reserved