لدائی کہ عمل
  • تاریخ: 2012 نومبر 21

افریقہ میں طلبۂ جامعۃ المصطفی کا تبلیغی نیٹ ورک ہونا چاہیے


           

اہل البیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق عالمی اہل بیت (ع) اسمبلی کے سیکریٹری جنرل حجت الاسلام والمسلین محمد حسن اختری نے شہر قم المقدس میں ثقافتی مسائل کے متعلق منعقد ہونے والی باہمی ہم فکری کی دوسری کانفرنس کے دوران خطاب کرتے ہوئے کہا کہ براعظم افریقہ میں اسلامی افکار کی ترویج بہت ضروری ہے کیونکہ اس وقت یہ براعظم وہابی افکار کی توجہات کا محور ہے حالانکہ ہم انقلاب اسلامی کے رونما ہونے کے بعد سے افریقہ میں اسلامی ترقی کو مشاہدہ کر سکتے ہیں اور اس وقت اس خطے کے لوگوں کے دلوں میں مذہب اہل بیت (ع) اور اسلامی جمہوریہ ایران کی محبت موجود ہے۔ 
عالمی اہل بیت (ع) اسمبلی کے سیکریٹری جنرل نے مزید کہا کہ اس موقع کو عظیم غنیمت سمجھتے ہوئے اس سے استفادہ کرنا چاہیے اور ہمیں چاہیے کہ افر یقہ میں اسلامی افکار کی تبلیغ و ترویج کا ا یک جامع لائحہ عمل تیار کریں تاکہ اس خطے کے لوگوں کے اندر پائی جانے والی صلاحیتیں نکھر کر سامنے آئیں۔ 
حجت الاسلام اختری نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ اس موضوع پر لبنانی مبلغین کی آراء لینے کی غرض سے ان کے ساتھ مختلف قسم کی نشستیں کر چکے ہیں اور اس مسئلے پر افریقہ میں موجود ایرانی سفیروں کے ساتھ مختلف میٹنگز کر چکے ہیں۔ 
انہوں نے مزید کہا کہ جامعۃ المصطی(ص) کے طلاب کو چاہیے کہ وہ افریقہ میں تبلیغی نیٹ ورک قائم کریں۔
انہوں نے اپنی گفتگو کے دوران اس بات کا ا ظہار کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کو چاہیے کہ وہ افریقہ میں کینسر، ایڈز اور ملیریا جیسی مہلک بیماریوں کے خلاف جدوجہد کا اعلان کرتے ہوئے اس براعظم کے مختلف حصوں میں ہسپتال بنائے اور اگر اس کام کوشروع کیا جائے تو مثبت نتائج برآمد ہوں گے چونکہ چین نے افریقہ کے اندر 40 بلین ڈالر کے مختلف پراجیکٹس کھول رکھے ہیں اور اس کا ثمرہ حاصل کر رہے ہیں جبکہ ایران چین اور مغربی ممالک کی نسبت زیادہ مؤثر ثابت ہو سکتا ہے۔

abna.ir 

Copyright © 2009 The AhlulBayt World Assembly . All right reserved